Home / ادب نامہ / نثر / کافکا کے افسانے / ایک عام خلفشار – فرانز کافکا

ایک عام خلفشار – فرانز کافکا

ایک عام خلفشار

 

ایک عام تجربہ ، اس کے نتیجے میں ایک عام خلفشار۔
الف کو ب کے ساتھ مقام ج پر کچھ اہم تجارتی معاملت کرنا ہے۔ ابتدائی بات چیت کے لیے وہ مقام ج تک جاتا ہے ۔ وہ دس منٹ میں راستہ طے کر لیتا ہے اور واپسی میں بھی اسے اتنا ہی وقت لگتا ہے ۔ واپس آکر وہ گھر والوں کو اپنی اس مہم کا فخریہ انداز میں بتاتا ہے۔
دوسرے دن پھر وہ مقام ج جاتا ہے ۔ اس مرتبہ سودا پکا کرنے کے لیے ۔ سفر کا انداز بالکل وہی ہے ، کم ازکم الف کے خیال میں وہی ہے ، جو ایک دن پہلے اختیار کیا گیا تھا ، لیکن اس بار اس کو ج تک پہنچنے میں دس گھنٹے لگتے ہیں ۔ جب وہ شام کے وقت تھکا ہارا وہاں پہنچتا ہے تو اس کو بتایا جاتا ہے کہ اب اس کے نہ آنے سے آدھے گھنٹے پہلے خود اس قصبے کی طرف روانہ ہو چکا ہے ، اور یہ کہ سڑک پر وہ دونوں ایک دوسرے کے پاس سے ہو کر گزرے ضرور ہوں گے۔ الف کو انتظار کرنے کا مشورہ دیا جاتا ہے لیکن کاروبار کی دھن میں فوراً ہی اٹھ کھڑا ہوتا ہے اور اپنے گھر کی طرف لپکتا ہے۔
اس بار اس کا سفر ایک سیکنڈ میں طے ہو جاتا ہے ۔ لیکن وہ خود اس بات کی طرف کوئی توجہ نہیں کر تا۔ گھر پہنچ کر اسے پتا چلتا ہے کہ ب تو بہت سویرے اس کے روانہ ہوتے ہی ، آگیا تھا۔ گھر کے دروازے پر الف سے اس کی ملاقات بھی ہوئی تھی اور اس نے معاملت کی یاد دہانی بھی کی تھی۔ لیکن الف نے جواب میں عدم الفرصتی اور جانے کی جلدی کا عذر کر دیا تھا۔

بہر حال، الف کے اس ناقابلِ رویے کے باوجود ب اس کی واپسی کے انتظار رکا رہا تھا ۔ اس نے کئی بار دریافت تو ضرور کیا کہ الف واپس لوٹا یا نہیں ، تا ہم وہ اب بھی اوپر الف کے کمرے میں بیٹھا ہوا ہے ۔ ب سے فوری ملاقات اور ہر بات کی صفائی پیش کردینے کا موقع مل جانے پر خوشی سے نہال ہو کر الف تیزی سے زینے چڑھنے لگتا ہے ۔ وہ اوپر تک آپہنچتا ہے کہ ٹھوکر کھا کر گر پڑتا ہے ۔ اس کی ایک نس چڑھ جاتی ہے ۔ اور اس وقت جبکہ تکلیف کی شدت سے اس پر غشی طاری ہو رہی ہے ، وہ چیخ بھی نہیں سکتا ۔ وہ اندھیرے میں صرف دھیرے دھیرے کراہ سکتا ہے۔ اس کو۔ معلوم نہیں بہت دور پر بالکل نذدیک سے ۔ ب کی آواز سنائی دیتی ہے جو بڑے طیش کے عالم میں پیر پٹختا ہوا زینوں سے اترتا ہے اور ہمیشہ کے لیے غائب ہو جاتا ہے۔

 

 

admin

Author: admin

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے