Home / صحت / نیند کی کمی سے ہونے والے نقصانات

نیند کی کمی سے ہونے والے نقصانات

رات کی نیند کس کے دل کو نہیں بھاتی ، یہ نہ صرف آپ کے مزاج کو خوشگوار بناتی ہے بلکہ آنکھوں کے گرد سیاہ حلقے بھی پیدا نہیں ہوتے ۔مناسب دورانیے تک سونا دل، وزن اور ذہن سمیت سب چیزوں کے لیے بہترین ثابت ہو تا ہے۔طبی ماہرین کے روزانہ 7 سے 8 گھنٹے نیند کرنا صحت کے لیے بہت ضروری ہے۔
نیند کی کمی کے ایسے نقصانات ہیں جن کا آپ سوچ بھی نہیں سکتے ، جن میں کچھ کا ذکر یہاں درج کیا جاتا ہے۔

چڑچڑا پن

بے خواب راتوں کے نتیجے میں چڑ چڑے پن اور جذباتی پن کی شکائت عام ہوجاتی ہے۔ یہ بات ایک تحقیق میں سامنے آئی ہے کہ منفی جذبات نیند کی کمی کی وجہ سے پیدا ہوتے ہیں۔
سردرد
سائنس دان اس حوالے سے پر یقین نہیں کہ نیند کی کمی کس طرح سردرد کا باعث بنتی ہیں مگر ایسا ہوتا ضرور ہے۔ بے خواب راتوں کے نتیجے میں آدھے سر کا درد ہونے لگتا ہے جبکہ خراٹے لینے والے 36 سے58 فیصد افراد صبح سردرد کا شکار ہوتے ہیں۔

موٹاپا

کم نیند کے نتیجے میں لوگوں کا جسمانی ہارمون کا توازن بگڑ جاتا ہے جس کے نتیجے میں کھانے کی اشتہا خاص طور پر بہت زیادہ کیلوریز والی غذا کی خواہش پیدا ہوتی ہے جس کے نتیجے میں موٹاپا پیدا ہوتا ہوں۔ اور اس کے ساتھ ساتھ تھکاوٹ کا احساس ہروقت طاری رہتا ہے۔
بینائی کی کمزوری
نیند کی کمی بینائی کی کمزوری، دھندلا پن اور ایک جگہ دو نظر آنے کی شکل میں بھی سامنے آسکتا ہے ۔ جتنا زیادہ وقت آپ جاگ کر گزارتے ہیں اتنی ہی بینائی میں خرابی کا امکان بڑھتا ہے جبکہ واہموں کے تجربے کا امکان بھی بڑھتا ہے۔

امراضِ قلب

ایک تحقیق کے دوران لوگوں کو 88 گھنٹے تک سونے نہیں دیا گیا جس کے نتیجے میں بلڈ پریشر اوپر گیا جو کہ زیادہ حیران کن امر نہیں تھا ۔ مگر جب ان افراد کو ہر رات 4 گھنٹے تک سونے کی اجازت دی گئی تو دل کی رفتا ر بڑھ گئی اور ایسے پروٹین کا ذخیرہ جسم میں ہونے لگا جو امراض ِ قلب کا باعث بنتا ہے۔

سست ردِعمل

جب نیند پوری نہ ہو تو کسی بھی واقعے پر ردِ عمل کا اظہار سست ہو جاتا ہے۔ نیند پوری کرنے والے افراد کی فیصلہ کرنے کی صلاحیت ان لوگوں سے کہیں زیادہ ہوتی ہے جو لوگ نیند کی کمی کا شکار ہوتے ہیں۔

توجہ کی صلاحیت متاثر ہونا

نیند کی کمی توجہ مرکوز کرنے کی صلاحیت کو کم کردیتی ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق اگر آپ ذہنی طور پر چوکنا اور ہوشیار رہنا چاہتے ہیں تو نیند پوری کرنی چاہیے ورنہ ذہن غنودگی کا شکار ہو جاتا ہے۔

بولنے میں مشکلات

نیند کی شدید کمی ہکلانے یا بولنے میں مشکلات کا باعث بن سکتی ہے۔ زیادہ نیند کی کمی کا شکار افراد ہکلانے ، بات کرتے وقت بات بھول جانے ، آہستگی سے بات کرنے اور مبہم باتیں کرنے کا شکار ہو سکتے ہیں ۔

نزلہ و زکام کا دائمی شکار

اگر آپ ہر وقت نزلہ زکام رہنے کی وجہ سے پریشان رہتے ہیں اور کہیں بھی جانے پر فلو حملہ آور ہو جاتا ہے تو اس کی ایک ممکنہ وجہ ناکافی نیند بھی ہو سکتی ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق جو لوگ سات گھنٹے سے کم نیند لیتے ہیں ان میں بیماری ہونے کا خطرہ تین گنا زیادہ ہوتا ہے۔

 

 

admin

Author: admin

Check Also

فالج کی چند خاموش علامات

فالج ایسا مرض ہے جس کے دوران دماغ کو نقصان پہنچتا ہے اور جسم کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے