Home / صحت / پھلوں کے فوائد / پھل کریں اب گوشت کی کمی پوری

پھل کریں اب گوشت کی کمی پوری

پروٹین ہمارے جسم کی اہم غذائی ضرورت ہے جو ہم گوشت، انڈے، دودھ اور ڈیری پروڈکٹس سے حاصل کرسکتے ہیں۔ ہم پھلوں سے بھی پروٹین حاصل کرسکتے ہیں خاص طور پر وہ لوگ جو گوشت نہیں کھانا چاہتے یا اس سے پرہیز کرتے ہیں وہ پھلوں سے پروٹین حاصل کرکے اپنی جسمانی ضرورت پوری کر سکتے ہیں۔
یہ پھل گوشت اور انڈے کے برابر مقدار میں تو پروٹین نہیں دے سکتے لیکن ان سے حاصل ہونے والی پروٹین زیادہ مفید میں ہوتی ہے کیونکہ پروٹین ایسے ذرائع سے حاصل کرنی چاہئے جن میں کولیسٹرول اور سیچوریٹڈ فیٹس بہت کم ہوں۔ یہی وجہ ہے کہ ماہرین جانوروں کے بجائے پھلوں اور سبزیوں سے پروٹین حاصل کرنے کی صلاح دیتے ہیں ۔

پروٹین والے پھل

پھلوں میں اہم غذائی اجزاء، وٹامنز، قدرتی شکر اور فائبر شامل ہوتا ہے۔ یہ تمام چیزیں ہماری صحت کے لئے بہت ضروری ہیں۔ لیکن کچھ پھل ایسے بھی ہیں جن سے دوسرے غذائی اجزاء کے ساتھ ہلکی پروٹین بھی حاصل کیے جاسکتے ہیں۔

کشمش
کشمش کا استعمال نہ صرف میٹھے پکوانوں ،کیک اور ڈیزرٹس میں کیا جاتا ہے بلکہ اسے ڈرائی فروٹ کی حیثیت سے اسنیکس کے طور پر بھی کھایا جاتا ہے۔کشمش انگوروں کی خشک شکل ہے۔ یونائٹڈ اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ آف ایگریکلچر کے مطابق 100 گرام کشمش سے 3گرام پروٹین حاصل ہوسکتی ہیں۔

امرود
وٹامن سی سے بھرپور پھل امرود کو اکیلا یا سلاد میں ملا کر بھی کھایا جاسکتا ہے۔ اس سے بنائی گئی فروٹ چاٹ بہت ہی مزے دار لگتی ہے۔ امرود میں وافر مقدار میں فائبر ہوتا ہے 100 گرام امرود میں 5گرام فائبر اور2.6گرام پروٹین ہوتا ہے۔

کھجور
کھجور کا استعمال پورے مشرق وسطیٰ میں سینکڑوں سالوں سے کیا جارہا ہے۔یہ ناصرف خالص کھائی جاتی ہے بلکہ اسے دوسرے اجزاء کے ساتھ ملا کر پیسٹ بھی بنایا جاتا ہے جسے ملک شیک اور بیک کی ہوئی چیزوں میں مٹھاس کے لئے ڈالا جاتا ہے۔ 100گرام کھجور میں 2.45گرام پروٹین ہوتی ہے۔جس کے ساتھ 8گرام فائبر بھی ہوتا ہے۔

آلو بخارا
آلو بخارے کو خشک کرکے بنائے جاتے ہیں اس میں اہم معدنیات، وٹامنز اور کچھ اہم غذائی اجزاء بھی شامل ہوتے ہیں۔ 100گرام آلو بخارے میں 2.18گرام پروٹین اور7 گرام فائبر ہوتا ہے۔

 

 

admin

Author: admin

Check Also

فالج کی چند خاموش علامات

فالج ایسا مرض ہے جس کے دوران دماغ کو نقصان پہنچتا ہے اور جسم کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے